shumaila-javed-bhatti

بلاسود زرعی قرضے این آر ایس پی کا قائدانہ کردار شمائلہ جاوید بھٹی

بلاسود زرعی قرضے این آر ایس پی کا قائدانہ کردار
شمائلہ جاوید بھٹی
 
shumaila-javed-bhattiویسے تو ماضی گواہ ہے کہ کسان دوست ہوں یا عوام دوست ایسے منصوبے اور نعرے کاغذی ہی ثابت ہوئے ہیں۔ مگر پنجاب حکومت کی چھوٹے کسانوں کے لئے 100ارب روپے کے بلاسود قرضے زمینی حقیقت بن رہے ہیں جو کہ نیک شگون ہے۔ ماضی میں غریبوں کے نام پر سیاست بھی کی گئی اور ٹی وی کے کھیتوں پر دولت کی بارش بھی۔ مگر عملاً چھوٹے کسانوں کا صرف احتحصال کیا گیا۔مگر اب کی بار صحیح معنوں میں چھوٹے کسانوں تک کمپیوٹرئزاڈ نظام کے تحت بلا سود قرضوں کی تقسیم بہت احسن طریقے سے جاری و ساری ہے۔ بلاسود قرضوں کے اجراء میں تحصیل گوجر خان کی حد تک تو بلاشک و شبہ نیشنل رورل سپورٹ پروگرام این آر ایس پی کا کردار قائد انہ ہے۔ جس کا کریڈٹ این آر ایس پی کے مرکزی قائد جناب ملک فتح خان کے ویژن اور تحصیل کی سطح پر محمد بشارت کی ذاتی دلچسپی اور محنت کو جاتا ہے۔ کرے کوئی بھرے کوئی کے مصداق دوسروں کی کوتاہوں اور کوتاہ نظریوں کا بھی خمیازہ این آر ایس پی کے تحصیل انچارج محمد بشارت کو ہی بھگتنا پڑتا ہے۔ مگر سلام ہے محمد بشارت پر جو ہر روز نئے جوش و جذبے کے تحت این آر ایس پی کی خدمات کی توسیع اور ساکھ میں اضافے کے لئے میدان عمل میں موجود ہوتا ہے۔ ہم حکومتی اداروں پر تنقید تو کرتے ہیں مگر اچھے کام کی تعریف نہ کرنا کم ظرفی ہے۔ اچھے کام کرنے والے ادارے اور افراد پاکستان کا روشن چہرہ ہیں۔ 
 ملک فتح خان
ملک فتح خان
زراعت کا شعبہ ہمارے ملک کی معیشت میں نہایت اہمیت کا حامل ہے ۔ملک کی معاشی ترقی کے لئے اس شعبہ پر توجہ دیئے بغیر ہم ترقی کے اہداف حاصل نہیں کر سکتے چھوٹا کسان خوشحال ہوگا تو ملک خوشحال ہوگا۔پاکستان دنیا کے ان خوش نصیب ممالک میں شامل ہے جسے قدرت نے نہایت بیش قیمت وسائل سے نوازا ہے، پاکستان کے پاس دنیا کا بہترین نہری نظام بھی ہے اور سونا اگلتی زمینیں ہیںیہی وجہ ہے کہ زراعت کا شعبہ ہمیشہ وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف اور وزیر اعلی پنجاب محمد شہباز شریف کی توجہ کا مرکز رہا ہے۔ماضی میں وفاقی حکومت کا کسان پیکج ہو یا سبسڈی پر کھادوں کی فراہمی ،پنجاب حکومت کی طرف سے سبسڈی پر گرین ٹریکٹر زو دیگر زرعی آلات کی فراہمی ہو یا دیگر اقداامات یہ سب کسان دوستی کا منہ بولتا ثبوت ہیں۔ خادم اعلی پنجاب محمد شہباز شریف کی قیادت میں حکومت پنجاب کا فوکس زرعی ترقی ہے اور انہوںنے ہمیشہ کسانوں کیلئے بہترین زرعی پالیسیاں متعارف کروائی ہیں اور زراعت کی بہتری کیلئے درکار وسائل فراہم کرنے سے کبھی بھی صرف نظر نہیں کیا یہی وجہ ہے کہ رواںمالی سال زراعت کی ترقی کے لئے اربوں روپے رکھے گئے ہیں۔ حکومت پنجاب کی زراعت کے فروغ کیلئے پالیسیوں کا ذکر کیا جائے تو ان میں حال ہی میں متعارف کروائی جانے والی چھوٹے کسانوں کیلئے بلا سود زرعی قرضوں کی فراہمی کی پالیسی ہر لحاظ سے منفرد اور انقلابی پالیسی ہے ۔ بلا سود قرضوں کے اس منصوبہ کے تحت حکومت پنجاب ساڑھے بارہ ایکٹر تک زرعی اراضی کے مالکان کو بلا سود قرض فراہم کرے گی ۔ اس پالیسی کے تحت قرض حاصل کرنے کے خواہش مند کسان کو فصل خریف کیلئے 5ایکٹر اراضی پر فی ایکٹر 40ہزار روپے جبکہ فصل ربیع کیلئے 25ہزار روپے بلا سود قرض فراہم کیا جائے گا ۔ بلا سود قرضوں کی فراہمی کے اس پروگرام سے زیادہ سے زیادہ کسانوں کو مستفید کرنے کیلئے اس کا نہایت آسان طریقہ کار واضع کیا گیا ہے جس کے مطابق کسانوں کو پاس بک کیلئے پٹواری یا کسی ریونیو آفیسر سے رجوع نہیں کرنا پڑے گا بلکہ اسے لینڈ ریکارڈ سنٹرز سے کمپیوٹرائزڈ زرعی پاس بک جاری کی جائے گی جس کے ذریعے وہ متعلقہ بینکوں سے بلا تاخیر قرض کی رقم حاصل کر کے فصلوں کی بوائی کیلئے استعمال کر سکیں گے ۔ حکومت پنجاب کی ہدایات کے مطابق ضلع خانیوال میں ڈی سی او زید بن مقصود کی زیر نگرانی بلا سود قرضوں کے اجرا کیلئے
محمد بشارت
محمد بشارت
کسانوں کی رجسٹریشن کا آغاز کیا جا چکا ہے۔ صوبہ بھر کی طرح ضلع خانیوال میں بھی کسانوں کو بیماریوں سے پاک گندم کے بیج کی فراہمی کی گئی ہے۔ضلع خانیوال میں پانچ لاکھ پندرہ ہزار ایکڑ اراضی پر گند م کاشت کی جارہی ہے کسان پیکج کے تحت 658 گا ئوں کے 1582 چھوٹے کاشتکاروں میں 2975 گندم کے بیج کے مفت تھیلے بزریعہ قرعہ اندازی تقسیم کر دیئے گئے ہیں لائیو سٹاک کا شعبہ زراعت کی ترقی اور کسان کی خوشحالی کیلئے نہایت اہم ہے اسی کے پیش نظر حکومت پنجاب نے ریسکیو 9211سروس کا آغاز کیا ہے تا کہ کسانوں کے مویشیوں کو علاج معالجہ کی بہتر سہولیات فراہم کی جا سکیں اسی مقصد کے پیش نظر فیلڈ اسسٹنٹس کو موٹر سائیکلیں فراہم کی گئی ہیں ہر ضلع میں موبائل ویٹرنری ہسپتال بھی فراہم کیے گئے ہیں۔ حکومت پنجاب کی ان زرعی پالیسیوں کے نتیجہ میں زرعی پیداوار میںاضافہ اور زرعی معیشت مضبوط ہو گی اور پاکستان خوراک میں خود کفیل کسان خوشحال ہو گا ۔

تعارف سہیل احمد صدیقی

أضف تعليقاً

لن يتم نشر عنوان بريدك الإلكتروني. الحقول الإلزامية مشار إليها بـ *

يمكنك استخدام أكواد HTML والخصائص التالية: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>