وزیر اعظم اخلاقی طور پر استعفی دیں، سراج الحق

امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق کا کہناہے کہ جوڈیشل کمیشن کی انکوائری ختم ہونے تک وزیراعظم کو اخلاقی طور پر مستعفی ہوجانا چاہیے۔

 سینیٹر سراج الحق کا پارلیمنٹ کے باہر اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ اور اعتزاز احسن کے ہمراہ پریس کانفرنس میں کہنا تھا کہ وزیر اعظم استعفی دے کر آزادانہ تحقیقات کا راستہ ہموار کریں لیکن اگرنواز شریف کرسی پر ہیں تو ادارے کیسے تحقیقات کر سکیں گے۔ سراج الحق کا کہناتھا کہ پاناما کیس پر سپریم کورٹ کا فیصلہ منزل نہیں،لیکن کامیابی ہے جب کہ اعتزاز احسن پارٹی فیصلے کی وجہ سے سپریم کورٹ نہیں آئے اور ان سے اس بارے میں مشاورت کریں گے۔

اس سے قبل سینیٹ کے اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق کا کہنا تھا کہ  احتساب کا مطالبہ کرنے والوں کا مذاق اڑایا گیاہے ، پاکستان کا ہر شہری ملک سے کرپشن کو ختم کرنے کا مطالبہ کرتا ہے۔

 سینیٹر سراج الحق کا پانامالیکس کیس کے فیصلے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہنا تھاکہ دو ججز نے وزیراعظم کونااہل قرار دیا جس سے کرپشن کے خلاف جاری ہماری مہم کو تقویت ملی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان  میں بسنے والا ہر شخص کرپشن کا خاتمہ چاہتاہے ۔ انکاکہنا تھا کہ اسکول کے بچوں ، ماؤں، بہنوں، بیٹیوں کابھی مطالبہ ہے کہ کرپشن ختم کرو۔

سراج الحق کا کہنا تھا کہ اپوزیشن نے بڑے اخلاص کیساتھ حکومت سے کمیشن کا مطالبہ کیا تھا لیکن احتساب کا مطالبہ کرنے والوں کا مذاق اڑایا گیا۔

Print Friendly

متعلق سرفرازاحمد عباسی