عدالت میں پیش ہوکر ہی اس کا اختیار چیلنج کیا جاسکتا ہے، اٹارنی جنرل

اسلام آباد: اٹارنی جنرل اشتر اوصاف نے کہا ہے کہ عالمی عدالت انصاف کے احترام میں وہاں پیش ہوئے کیوں کہ عدالت میں پیش ہوکر ہی اس کے دائرہ اختیار کو چیلنج کیا جاسکتا ہے، آج کے فیصلے سے کلبھوشن کیس پر کوئی فرق نہیں پڑا۔

اپنے بیان میں اٹارنی جنرل اشتر اوصاف نے کہا کہ کلبھوشن یادیو کے پاس ابھی بھی اپیل کا موقع ہے،عالمی عدالت انصاف جلد ازجلد سماعت کرے، ہم عدلیہ کے احترام میں عدالت میں پیش ہواکیوں کہ عدالتی دائرکار پراعتراض عدالت میں پیش ہوکر ہی  کیا جاسکتا ہے، ہم نے آئی سی جے کو یقین دہانی کرائی تھی کہ اسے تمام قانونی مواقع دیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان سمجھتا ہے کہ تمام مسائل پرامن طریقے سے حل  کیے جاسکتے ہیں،بھارت کلبھوشن کی امن مخالف سرگرمیاں نہیں چھپا سکتا۔

واضح رہے کہ حکومت اور پاکستانی وکلا پر تنقید کی جارہی ہے کہ اگر پاکستان کو عالمی عدالت انصاف کے دائرہ اختیار پر اعتراض تھا تو وہ بھارتی درخواست کی سماعت میں پیش ہی کیوں ہوا؟

Please follow and like us:

Comments

comments

متعلق نامہ نگار