پاکستان چیمپئنز ٹرافی سے سرفراز ہو گیا

چیمپئنز ٹرافی میں پہلی بار فائنل کھیلنے والی پاکستان کرکٹ ٹیم نے روایتی حریف بھارت کو 180رنز سے شکست دیدی ہے۔ ایونٹ کے پہلے میچ میں بھارت کے ہاتھوں شکست سے دوچار ہونے والی آٹھویں نمبر کی ٹیم کے بارے میں کوئی سوچ بھی نہیں سکتا تھاکہ وہ کپ اپنے گھر لے جائے گئی ،مگر سرفراز کی قیادت میں گرین شرٹس نے یہ کارنامہ انجام دیدیا۔

پاکستان کی جیت میں فخر زمان کی شاندار سنچری ،محمد حفیظ اور اظہر علی کی نصف سنچریوں کے ساتھ محمد عامر ،حسن علی ، شاداب خان کی بولنگ نے بھی بھرپور کردار ادا کیا۔

پاکستان اور انڈیا نویں بار ایک روزہ میچوں کے کسی ٹورنامنٹ کے فائنل میں مدِمقابل تھے۔ آئی سی سی کے زیرِ اہتمام 50 اووروں کے کسی ٹورنامنٹ کے فائنل میں یہ ٹیمیں پہلی بار آمنے سامنے آئیں۔ پاکستان پہلی بار چیمپیئنز ٹرافی کے فائنل تک پہنچا اور فتح یاب ہوا جبکہ انڈیا اپنے اعزاز کے دفاع میں ناکام رہا۔ دونوں ملکوں کے درمیان اب تک مجموعی طور پر 128 میچ کھیلے جا چکے ہیں جن میں سے 72 پاکستان نے جیتے، 52 میں انڈیا فاتح رہا، جب کہ چار بےنتیجہ ثابت ہوئے۔ دونوں ٹیموں کے مابین اب تک کھیلے جانے والے ایک روزہ میچوں کے آٹھ فائنلز میں چھ پاکستان نے جب کہ دو انڈیا نے جیتے ہیں

بھارتی کپتان ویرات کوہلی نے ٹاس جیت کر پاکستان کو بیٹنگ کی دعوت دی ،گرین شرٹس نے فخر زمان کی شاندار سنچری اور اظہر علی اور محمد حفیظ کی نصف سنچریوں کی بدولت مقررہ 50اوورز میں 338رنز بنائے۔ بھارت کے ابتدائی 6 کھلاڑی 72 رنز پر پویلین لوٹ گئے، اس کے بعد پانڈیا نے رویندا جڈیجا کے ساتھ 80رنز کی شراکت قائم کی۔ اس دوران پانڈیا نے اپنی نصف سنچری بھی مکمل کی اور 6چھکوں اور 4چوکوں کی مدد سے 76رنز کی اننگز کھیلی اور رن آئوٹ ہوئے۔

اس کے بعد باقی بھارتی کھلاڑی پاکستانی بائولنگ کے خلاف خاطرخواہ مزاحمت نہ کرسکے اور پوری ٹیم 30اعشاریہ 3اوورز میں 158رنز پر ڈھیر ہوگئی۔

ہدف کے تعاقب میں بھارت کی پہلی وکٹ صفر کے اسکور پر گر گئی ،روہت شرما کو محمد عامر نے آئوٹ کیا،اس کے بعد کپتان ویرات کوہلی کھیلنے آئے۔ 6 کے اسکور پر اظہر علی نے ویرات کوہلی کا سلپ میں کیچ گرادیا ،اس کے بعداگلی ہی گیند پر محمد عامر نے ویرات کو شاداب خان کی مدد سے قابو کیا۔ اس کے بعد تیسری وکٹ شیکھردھون کی گری ،اسے بھی محمد عامر نے سرفراز کی مدد سے میدان بدر کیا۔ بھارت کے ابتدائی تین کھلاڑی صرف 33 کے اسکور پر پویلین لوٹ چکے تھے۔

یوراج سنگھ آئوٹ ہونے والے چوتھے بھارتی کھلاڑی تھے ،54 کے مجموعے پر انہوں نے 22رنز ہی بنائے تھے شاداب خان نے جارحانہ مزاج بیٹسمین کو چلتا کیا۔ اگلے ہی اوور میں 54 ہی کے اسکور پر حسن علی سابق بھارتی کپتان ایم ایس دھونی کی وکٹ لے اڑے،انہوں نے 4 رنز بنائے۔بھارت کی چھٹی وکٹ 72 کے اسکور پر گری ،جادیو 9 رنز بنا کر شاداب خان کا دوسرا شکار بنے۔ پاکستان کی طرف سے محمد عامر اور حسن علی نے 3،3جبکہ شاداب خان نے 2اور جنید خان نے ایک بھارتی کھلاڑی کو میدان سے باہر کا راستہ دکھایا۔


Comments

‘ہم سب’ کا کمنٹس سے متفق ہونا ضرور نہیں ہے۔ کمنٹ کرنے والا فرد اپنے الفاظ کا مکمل طور پر ذمہ دار ہے اور اس کے کمنٹس کا ‘ہم سب’ کی انتظامیہ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

نیوز ڈیسک کی دیگر تحریریں

متعلق ویب ڈیسک