دبئی اور برطانیہ نے نواز شریف کی مدد سے انکار کر دیا

حسین نواز دبئی کے حکمرانوں کی منت سماجت کرکے دستاویزات حاصل کرنا چاہتے ہیں
حسن نواز برطانوی حکومت کی مدد سے ورجن آئی لینڈ سے خط لے کر عدالت میں جمع کرائے کے خواہشمند
اسلام آباد( مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعظم نواز شریف کے بیٹے حسن نواز اور حسین نواز بیرونی ممالک سے مدد لینے کیلئے دبئی اور برطانیہ پہنچ چکے ہیں۔ دبئی کے حکمرانوں نے نواز شریف کا ٹیلی فون سننے سے انکار کیا تھا جس کے بعد سرکاری سطح پر دفتر خارجہ نے سفارتی سطح پر حکومت یو اے ای سے رابطہ کرکے درخواست کی تھی کہ وہ وزیراعظم پاکستان نواز شریف کا ٹیلی فون سنیں۔ نواز شریف کا رابطہ ہونے کے بعد ان کے بڑے بیٹے حسین نواز دبئی کے حکمرانوں کی منت سماجت کرکے دبئی سے دستاویزات اور سرٹیفکیٹ لے رہے ہیں جبکہ نواز شریف کے دوسرے بیٹے حسن نواز برطانوی حکومت کی مدد سے ورجن آئی لینڈ سے خط لے کر عدالت عظمیٰ میں جمع کرانا چاہتے ہیں تاکہ عدالت میں خود کرپشن اور بے ایمانی سے پاک قرار دلاسکیں۔ ذرائع نے کہا ہے کہ اگر دونوں حکومتوں نے نواز شریف کے حق میں کوئی دستاویزدی بھی تو فرانزک تجزیے کے بعد اس کی قانونی اہمیت ختم ہوجائیگی۔ برطانوی حکومت نے نواز شریف کی مدد سے دو ٹوک الفاظ میں انکار کردیا ہے جبکہ دبئی کے حکمرانوں نے بھی واضح کہا ہے کہ نواز شریف کی کرپشن کو سہارا نہیں دیا جائیگا۔

متعلق امتیاز کاظمی