تحریک انصاف اپنی پالیسیوں کیوجہ سے ختم ہورہی ہے، ناز بلوچ

کراچی: تحریک انصاف کی سابق رہنماء ناز بلوچ نے کہا ہے کہ پارٹی کے فیصلے پہلے عمران خان کرتے تھے مگر اب پارٹی پالیسی کوئی اور بناتا ہے، چار پانچ جماعتیں تبدیل کرنے والے لوگوں کو پی ٹی آئی میں خوش آمدید کہا جارہا ہے جس کی وجہ سے کارکن ناراض اور  تحریک انصاف ختم ہورہی ہے۔

اے آر وائی نیوز کے پروگرام سوال یہ ہے میں میزبان ماریہ میمن کے سوالات کا جواب دیتے ہوئے ناز بلوچ نے کہا کہ مجھے عمران خان سے کوئی گلہ نہیں مگر حقیقت یہ  ہے کہ اپنی ہی پارٹی پالیسیوں کی وجہ سے تحریک انصاف ختم ہوتی جارہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پارٹی کے فیصلے پہلے عمران خان کرتے تھے مگر اب ایسا نہیں ہورہا، چار پانچ جماعتیں تبدیل کرنے والے لوگوں کو تحریک انصاف میں خوش آمدید کہا گیا اور فیصلوں کا اختیار بھی دیا گیا جس کی وجہ سے عام کارکن سخت ناراض ہے۔

ناز بلوچ نے کہا کہ دوسری پارٹیوں سے آنے والے لوگ پوچھتے ہیں ’’ناز بلوچ کون ہے اور شاید وہ کوئی عام کارکن ہے‘‘، میں تحریک انصاف کی عام کارکن تھی اور ہمیشہ پارٹی کے لیے اصولوں کے عین مطابق کام کیا اس لیے پارٹی ٹکٹ پر قومی اسمبلی کی نشست پر الیکشن بھی لڑا۔

اُن کا کہنا تھا کہ پارٹی میں پیدا ہونے والی برائیوں کی مسلسل نشاندہی کی مگر کسی نے بات تک نہیں سنی، کراچی سے پی ٹی آئی کا ووٹ بینک ختم ہورہا ہے مگر چاہتی تھی کہ عمران خان شہر قائد کو زیادہ وقت دیں تاہم ایسا نہ ہوسکا اس کی اہم وجہ یہ بھی ہے کہ پارٹی کے فیصلے اب دوسری جماعتوں سے آنے والے لوگ کرتے ہیں۔

مزید پڑھیں: ناز بلوچ کون ہیں؟ نہیں جانتے،شاید عام سی کارکن ہوں، فواد چوہدری و شبلی فراز

ناز بلوچ کا مزید کہنا تھا کہ دوسری جماعتوں سے آنے والے لوگوں کو ویلکم کر کے عام کارکن کو نظر انداز کیا جارہا ہے، جب دوسری پارٹی سے لوگ آسکتے ہیں تو تحریک انصاف کے لوگوں کو دوسری جماعت میں جانا بھی ممکن ہے۔


اگرآپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اوراگرآپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پرشیئرکریں۔

Print Friendly

متعلق نامہ نگار