وزیر خزانہ اسحاق ڈار نےسپریم کورٹ سےجےآئی ٹی رپورٹ مسترد کرنے کی استدعاکردی

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ رجسٹرار آفس میں جمع کرائی گئی درخواست میں اسحاق ڈار کا موقف ہے کہ جے آئی ٹی رپورٹ میں ان کی آمدنی،اثاثوں کی تفصیل ثبوتوں کے ساتھ موجود ہے، لیکن اس کے باوجود جےآئی ٹی کی بدنیتی اس سےظاہر ہوتی ہے کہ انہوں نے مجھ سے خیرات کی گئی رقوم پربھی سوالات پوچھے جوکہ سپریم کورٹ کی طرف سے دیئےگئےمینڈیٹ سے متجاوز ہے۔

اپنے درخواست میں اسحق ڈار کا کہنا تھا کہ میں نے ایف بی آر کو جے آئی ٹی سے مکمل تعاون کے احکامات دیئے، جے آئی ٹی نے تمام دستاویزات کی وصولی کی رسید دی، میرا 2002 تک کا تمام ریکارڈ 1999 کی فوجی بغاوت کے بعد نیب کے پاس تھا۔جے آئی ٹی نے مجھے بدنام اور عدالت کو گمراہ کرنے کی کوشش کی ہے۔

متعلق امتیاز کاظمی