ڈاکٹرعاصم اورشرجیل میمن کے وارنٹ گرفتاری کے خلاف درخواستیں مسترد

سندھ ہائکورٹ،نیب کورٹ کی جانب سے وارنٹ کے اجراسے متعلق کیس کی سماعت ہوئی:فوٹو:فائل

 کراچی: سندھ ہائی کورٹ نے پیپلز پارٹی کے رہنما ڈاکٹرعاصم اور شرجیل میمن کے وارنٹ گرفتاری کے خلاف درخواستیں مسترد کردی ہیں۔ 

سندھ ہائی کورٹ میں بدعنوانی کےمقدمات میں نیب کورٹ کی جانب سے ملزمان کے وارنٹ کے اجرا سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔ مقدمے کی سماعت کرتے ہوئے اپنے ریمارکس میں عدالت کا کہنا تھا کہ احتساب عدالت کووارنٹ گرفتاری جاری کرنے کا اختیار ہے، نیب کورٹس ملزمان کی گرفتاری کے لئے وارنٹ جاری کرسکتی ہیں۔

جسٹس کے کے آغا نے ریمارکس میں کہا کہ نیب قوانین کا اطلاق کو تمام صوبوں پر یکساں ہونا چاہیے ہم نیب اور نیب کورٹس کے امتیازی سلوک سے خوش نہیں ہیں۔

جسٹس کے کے آغا نے ریمارکس دئیے کہ قانون عدالتیں تو نہیں بناتیں یہ کام تو پارلیمان کا ہے ، آپ چاہیں تو دوسرا قانون لے آئیں یا ترمیم کرلیں ، جس پر فاروق ایچ نائیک نے کہا کہ آصف زرداری کو ایک کیس میں ہفتہ کو رہا کیا گیا پیر کو کار ڈیوٹی کیس میں گرفتار کرلیا گیا تھا۔

سندھ ہائی کورٹ نے ڈاکٹر عاصم  اور شرجیل میمن کی وارنٹ اجرا کے خلاف درخواستیں مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ نیب کورٹس کے پاس اختیارات ہیں وہ ملزمان کی گرفتاری کیلئے وارنٹ جاری کرسکتی ہیں۔

متعلق نامہ نگار