عامر خان کی بچوں کو جنسی ہراسانی سے متعلق آگاہی دینے کی ویڈیو وائرل

بچوں کو ہر طرح کے خطرے سے آگاہ کرنے کے باوجود ان کی حفاظت کی ذمہ داری والدین کی ہے؛ عامر خان

بچوں کو ہر طرح کے خطرے سے آگاہ کرنے کے باوجود ان کی حفاظت کی ذمہ داری والدین کی ہے؛ عامر خان

 ممبئی: بالی ووڈ کے مسٹرپرفیکشنسٹ عامر خان کی ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہورہی ہے جس میں وہ چھوٹے چھوٹے معصوم بچوں کو سمجھاتے ہوئے نظر آرہے ہیں کہ انہیں جنسی ہراسانی سے کیسے بچنا چاہئے۔

حال میں قصور میں پھول جیسی ننھی زینب کے ساتھ زیادتی اور لرزہ خیز قتل نے پاکستان سمیت دنیا بھر کے لوگوں کو اپنی جانب متوجہ کرلیا۔ زینب کے قتل کے خلاف اٹھائی گئی ہر پاکستانی کی آواز بیرون ممالک خصوصاً بھارت تک میں سنی گئی۔ چونکہ بھارت میں بچوں اور خواتین کے ساتھ جنسی زیادتی اور قتل جیسے واقعات ہونا معمول کی بات ہے لہٰذا ان واقعات کی روک تھام کے لیے بھارتی اداکار عامر خان بہت پہلے اپنی آواز بلند کرچکے ہیں۔

اس خبرکوبھی پڑھیں: بچوں کو جنسی حملوں سے بچاؤ کی آگاہی دی جائے

2012 میں عامر خان نے بچوں سے جنسی زیادتی اور انہیں ہراساں کرنے کے حوالے سے’ستیہ میو جیتے‘کے نام سے پروگرام شروع کیا یہ پروگرام منفرد موضوع کے باعث عوام میں بے حد مقبول ہوگیا۔ عامر خان  پروگرام میں چھوٹے بچوں کے ساتھ ہونے والے واقعات منظر عام پر لے کر آئے جب کہ اسی شو میں وہ بچوں کو یہ سبق بھی دیتے نظر آئے کہ انہیں درندہ صفت انسانوں سے اپنی حفاظت کس طرح کرنی ہے۔ حال ہی میں پاکستان میں ننھی زینب کے ساتھ ہونے والے واقعے کے بعد عامر خان کی یہ ویڈیو سوشل میڈیا پر بےحد مقبول ہورہی ہے۔

اس خبرکوبھی پڑھیں: معصوم زینب کے قتل پر شوبز و کرکٹ ستارے بھی اشک بار

ویڈیو میں عامر خان بچوں کےساتھ ہلکے پھلکے انداز میں نہایت سنجیدہ موضوع پر گفتگو کرتے نظر آرہے ہیں، اس ویڈیو کو لوگ اس لیے بھی سراہ رہے ہیں کہ والدین اپنے بچوں سے اس حوالے سے بات نہیں کرپاتے لہٰذا عامر خان کی ویڈیو بچوں کو ان کی طرف بڑھنے والے خطرے کا احساس دلانے کے لیے بہترین ہے۔ عامر خان بچوں سے کہتے نظر آرہے ہیں کہ خطرے کا احساس ہوتے ہی انہیں زور سے چلانا چاہئے اور فوراً گھر کی طرف یا کسی بحفاظت مقام کی طرف بھاگنا چاہئے اور اس واقعے کی اطلاع اپنے والدین یا ٹیچر کو دینی چاہئے۔

اس خبرکوبھی پڑھیں: صبا قمر پھوٹ پھوٹ کر رو پڑیں

واضح رہے کہ ویڈیو کے آخر میں عامر خان والدین کو یہ پیغام بھی دیتے نظر آئے کہ بچوں کو ہر طرح کے خطرے سے آگاہ کرنے کے باوجود ان کی حفاظت کی ذمہ داری والدین کی ہے لہٰذا اپنے بچوں کے حوالے سے کبھی لاپرواہی نہ برتیں۔

متعلق شازیہ عندلیب